واشنگٹن(ویب ڈیسک) پینٹاگون نے روسی خطرے کے جواب میں امریکا کے جوہری اسلحہ خانہ کی تجدید اور نئے کم خرچ چھوٹے ایٹم بم تیار کرنے کا خاکہ پیش کر دیا۔ریئلٹی چیک میں برطانوی نشریاتی ادارے نے بتایا کہ اگرچہ سرد جنگ کے بعد دنیا میں جوہری ہتھیاروں کی تعداد بہت کم ہو گئی ہے، تاہم دنیا میں ابھی ایسے سینکڑوں جوہری ہتھیار موجود ہیں جنہیں مختصر نوٹس پر چلایا جا سکتا ہے۔ماہرین نے کہا کہ جوہری ہتھیار رکھنے والا ہر ملک اپنی ٹیکنالوجی کو جدت دے رہا ہے۔ ایٹمی اسلحہ مخفی رکھنے کی تمام کوششوں کے باجود 9 ممالک کے تقریباً 9000 جوہری ہتھیاروں کے بارے میں معلومات منظرِ عام پر آ چکی ہیں۔ ان میں سے تقریباً 1800 ہتھیار ایسے ہیں جو چند لمحوں کے نوٹس پر لانچ کیے جا سکتے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر امریکا اور روس کے پاس ہیں۔سٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ (سپری) کے مطابق جن وار ہیڈز کو ختم کیا جانا ہے ان کی تعداد 15000 ہے جو 1980ء کی دہائی میں 70 ہزار کے قریب تھی۔ حالیہ مہینوں میں شمالی کوریا نے جدید ترین میزائل تجربے کیے اور دعویٰ کیا کہ ان کے ہتھیار امریکا کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔ 1970ء سے اب تک امریکا، روس، برطانیہ، چین اور فرانس سمیت 190 ممالک نے جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے این پی ٹی پر دستخط کیے ہیں۔ بھارت، اسرائیل اور پاکستان نے اس معاہدے پر کبھی دستخط نہیں کیے جبکہ شمالی کوریا 2003ء میں اس معاہدے سے علیحدہ ہو گیا تھا۔این پی ٹی امریکا، روس، فرانس، برطانیہ اور چین کو قانونی طور پر جوہری طاقت مانتا ہے تاہم معاہدے کے تحت ان ممالک کو بھی جوہری ہتھیار رکھنے کی اجازت نہیں۔ جنوبی افریقا، بیلاروس، قزاقستان اور یوکرین نے اپنے جوہری ہتھیار ختم کر دئیے ہیں۔فیڈریشن آف امریکن سائنٹسٹس کے مطابق امریکا، برطانیہ اور روس اپنے ہتھیاروں کی تعداد کم کرتے رہے ہیں۔ اسرائیل اور فرانس کے پاس ہتھیاروں کی تعداد قدرے مستحکم رہی ہے جبکہ چین، پاکستان اور شمالی کوریا نئے ہتھیار بھی بنا رہے ہیں۔سپری کے سربراہ شینن کائل نے کہا کہ ہتھیاروں میں جدت لانا این پی ٹی کی روح کے منافی ہے۔ جوہری میزائلوں سے لیس وین گارڈ کو جوہری آبدوزوں میں بدلنا برطانیہ کا منصوبہ ہے۔ 2020ء کی دہائی تک برطانیہ کے جوہری ہتھیاروں کی تعداد 180 رہ جائے گی۔ادھر امریکہ نے اپنے ہتھیاروں میں جدت لانے کے لیے 2040ء کی دہائی تک 10 کھرب ڈالر خرچ کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ امریکا کے تقریباً 150 وار ہیڈز بیلجیئم، جرمنی، اٹلی، ہالینڈ اور ترکی میں نصب ہیں۔ شمالی کوریا نے گذشتہ سال ستمبر میں اپنا چھٹا جوہری تجربہ کیا تھا، تاہم ماہرین ابھی تک اس پر اتفاق نہیں کر سکے کہ شمالی کوریا کا جوہری پروگرام ان وار ہیڈز کو اس کے لانگ رینج میزائلوں کو لے جانے کے قابل بھی ہے یا نہیں؟نیوز ایجنسیوں کے مطابق پینٹاگون کے این پی آر پالیسی بیان میں امریکی فوج نے روس سے نمٹنے کیلئے چھوٹے جوہری ہتھیار بنانے کی تجویز دی ہے۔ 2010ء کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ امریکی فوج نے مستقبل کے جوہری خطرات کے بارے میں اس قسم کی سوچ کا اظہار کیا ہے۔روسی وزارتِ خارجہ نے واشنگٹن کی پالیسی کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ امریکی ایٹمی پالیسی کے خلاف روس کوحفاظتی اقدامات کا حق ہے۔

   
   

واشنگٹن(ویب ڈیسک) پینٹاگون نے روسی خطرے کے جواب میں امریکا کے جوہری اسلحہ خانہ کی تجدید اور نئے کم خرچ چھوٹے ایٹم بم تیار کرنے کا خاکہ پیش کر دیا۔ریئلٹی چیک میں برطانوی نشریاتی ادارے نے بتایا کہ اگرچہ سرد جنگ کے بعد دنیا میں جوہری ہتھیاروں کی تعداد بہت کم ہو گئی ہے، تاہم دنیا میں ابھی ایسے سینکڑوں جوہری ہتھیار موجود ہیں

جنہیں مختصر نوٹس پر چلایا جا سکتا ہے۔ماہرین نے کہا کہ جوہری ہتھیار رکھنے والا ہر ملک اپنی ٹیکنالوجی کو جدت دے رہا ہے۔ ایٹمی اسلحہ مخفی رکھنے کی تمام کوششوں کے باجود 9 ممالک کے تقریباً 9000 جوہری ہتھیاروں کے بارے میں معلومات منظرِ عام پر آ چکی ہیں۔ ان میں سے تقریباً 1800 ہتھیار ایسے ہیں جو چند لمحوں کے نوٹس پر لانچ کیے جا سکتے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر امریکا اور روس کے پاس ہیں۔سٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ (سپری) کے مطابق جن وار ہیڈز کو ختم کیا جانا ہے ان کی تعداد 15000 ہے جو 1980ء کی دہائی میں 70 ہزار کے قریب تھی۔ حالیہ مہینوں میں شمالی کوریا نے جدید ترین میزائل تجربے کیے اور دعویٰ کیا کہ ان کے ہتھیار امریکا کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔ 1970ء سے اب تک امریکا، روس، برطانیہ، چین اور فرانس سمیت 190 ممالک نے جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے این پی ٹی پر دستخط کیے ہیں۔ بھارت، اسرائیل اور پاکستان نے اس معاہدے پر کبھی دستخط نہیں کیے جبکہ شمالی کوریا 2003ء میں اس معاہدے سے علیحدہ ہو گیا تھا۔این پی ٹی امریکا، روس، فرانس، برطانیہ اور چین کو قانونی طور پر جوہری

طاقت مانتا ہے تاہم معاہدے کے تحت ان ممالک کو بھی جوہری ہتھیار رکھنے کی اجازت نہیں۔ جنوبی افریقا، بیلاروس، قزاقستان اور یوکرین نے اپنے جوہری ہتھیار ختم کر دئیے ہیں۔فیڈریشن آف امریکن سائنٹسٹس کے مطابق امریکا، برطانیہ اور روس اپنے ہتھیاروں کی تعداد کم کرتے رہے ہیں۔ اسرائیل اور فرانس کے پاس ہتھیاروں کی تعداد قدرے مستحکم رہی ہے جبکہ چین، پاکستان اور شمالی کوریا نئے ہتھیار بھی بنا رہے ہیں۔سپری کے سربراہ شینن کائل نے کہا کہ ہتھیاروں میں جدت لانا این پی ٹی کی روح کے منافی ہے۔ جوہری میزائلوں سے لیس وین گارڈ کو جوہری آبدوزوں میں بدلنا برطانیہ کا منصوبہ ہے۔ 2020ء کی دہائی تک برطانیہ کے جوہری ہتھیاروں کی تعداد 180 رہ جائے گی۔ادھر امریکہ نے اپنے ہتھیاروں میں جدت لانے کے لیے 2040ء کی دہائی تک 10 کھرب ڈالر خرچ کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ امریکا کے تقریباً 150 وار ہیڈز بیلجیئم، جرمنی، اٹلی، ہالینڈ اور ترکی میں نصب ہیں۔ شمالی کوریا نے گذشتہ سال ستمبر میں اپنا چھٹا جوہری تجربہ کیا تھا، تاہم ماہرین ابھی تک اس پر اتفاق نہیں کر سکے کہ شمالی کوریا کا جوہری پروگرام ان وار ہیڈز کو اس کے لانگ

رینج میزائلوں کو لے جانے کے قابل بھی ہے یا نہیں؟نیوز ایجنسیوں کے مطابق پینٹاگون کے این پی آر پالیسی بیان میں امریکی فوج نے روس سے نمٹنے کیلئے چھوٹے جوہری ہتھیار بنانے کی تجویز دی ہے۔ 2010ء کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ امریکی فوج نے مستقبل کے جوہری خطرات کے بارے میں اس قسم کی سوچ کا اظہار کیا ہے۔روسی وزارتِ خارجہ نے واشنگٹن کی پالیسی کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ امریکی ایٹمی پالیسی کے خلاف روس کوحفاظتی اقدامات کا حق ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
صدر مملکت نے سمری پر دستخط کردئیے، جنرل عاصم منیر نئے آرمی چیف بن گئے
آرمی چیف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کی سمری موصول، صدر عارف علوی کی ہنگامی حالت میں لاہور روانگی متوقع
عمران خان جنرل عاصم منیر کو کیوں پسند نہیں کرتے؟ علیم خان کی لیک آڈیو میں کیا دعویٰ کیا گیا ؟
لیفٹننٹ جنرل سید عاصم منیر کو آرمی چیف مقرر کرنے کا فیصلہ
صدر عارف علوی اہم تعیناتی کی سمری پر مجھ سے مشورہ کریں گے، عمران خان کا تہلکہ خیز بیان
فوج نے فیصلہ کیا ہے کہ آئندہ سیاست میں مداخلت نہیں کرے گی فوج نے اپنا کتھارسز شروع کردیا ہے امید ہے سیاسی جماعتیں بھی ایسا ہی کریں گے۔
مشرقی پاکستان فوجی نہیں سیاسی ناکامی تھی کوئی ایک سیاسی جماعت ملک کو درپیش چیلنجر سے نہیں نکال سکتی
جعلی اور جھوٹا بیانیہ بنا کر ملک میں ہیجان کی کیفیت پیدا کی گئی کیا آپ سمجھتے ہیں کہ غیرملکی سازش ہواور فوج خاموش رہے گی؟
اپنے بیان پر 200 فیصد کھڑا ہوں،ثبوت بھی موجود ہیں میرے خیال سے اب ن لیگ کی جماعت ختم ہو چکی
عاصم منیر ، قمر جاوید باجوہ کی جگہ نئے آرمی چیف ہونگے سینئر صحافی کا تہلکہ خیز دعویٰ


پی ایس ایل 7: پوائنٹس ٹیبل
ٹیم میچ پوائنٹ
ملتان سلطان 10 18
لاہور قلندرز 10 12
پشاور زلمی 10 12
اسلام آباد یونائیٹڈ 10 8
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز 10 8
کراچی کنگز 10 2

دلچسپ و عجیب
زیادہ بال کس چیز کی نشانی؟ سائنس نے جسم پرگھنے بال والوں کو خوشخبری دے دی
سسرال سے پسند کا لہنگا نہ آنے پر دلہن نے شادی سے انکار کر دیا
دنیا کا 8 ارب واں بچہ۔کس وقت اور کس ملک میں پیدا ہو گیا؟جانیں دلچسپ خبر
ذہین افراد کو چیلنج : ٹیچر کی عینک ڈھونڈیے، 11سیکنڈ میں
اونٹ سانپ کھانے کے بعد روتا کیوں ہے ۔ اونٹوں کو کون سی خطرناک بیماری ہوتی ہے؟ اونٹوں سے متعلق ناقابل یقین معلومات
“میرے نہ آنے سے کون سا سکول بند ہوجائے گا” طالب علم کی چھٹی کی درخواست پڑھ کر ہنسی آجائے

سپورٹس
فیفا ورلڈ کپ کا پہلا بڑا اپ سیٹ، سعودی عرب نے ارجنٹینا کو شکست دے دی
شاہین شاہ آفریدی کا اپینڈکس کا آپریشن کامیاب، سوشل میڈیا پر تصویر کے ساتھ پیغام جاری کر دیا
اس ملک کیلئے سب کچھ حاضر ہے،فائنل میں شکست کے بعد سوشل میڈیا پر اپنے تاثرات کا اظہار کیا ہے۔ شاہین شاہ آفریدی
”بابر کواُلٹے سیدھے مشورے دینے والوں کو مشورہ ہے کہ آرام سے بیٹھیں “بابراعظم کے والد نے بیٹے پر تنقید کرنے والوں کو جواب دیدیا
ویرات کوہلی کی پاکستان میں شاپنگ کرتے ہوئے ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی
ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں شکست: بھارتی کرکٹ بورڈ نے پوری سلیکشن کمیٹی کو برطرف کر دیا

Copyright © 2020 DailyQaim. All Rights Reserved | Privacy Policy