Wednesday May 22, 2024

ننھی زینب کے قاتل عمران کو جیل میں اور نہ ہی کسی معروف جگہ پھانسی دی جائے گی ۔۔ اسکی پھانسی کیلئے کونسی جگہ کا انتخاب کیا جائے گا ؟

قصور : ننھی زینب کے والد کا کہنا ہے کہ جہاں عمران نےمیری بیٹی کو مارا وہیں اس کو سزا دی جائے ، اس طرح کےمجرم کوسر عام سزائےموت دی جائے، کسی این جی او کی پرواہ نہیں کی جائے ، بچے بچیوں کو محفوظ کیا جائے۔ تفصیلات کے مطابق ننھی زینب کے والد امین انصاری نے مطالبہ کیا ہے کہ جہاں عمران نےمیری بیٹی کو مارا وہیں اس کو سزا دی جائے،

آج کا فیصلہ صرف زینب کے حوالے سے تھا ، باقی بچیوں کے حوالے سے ابھی فیصلہ نہیں آیا۔امین انصاری کا کہنا تھا کہ حکومت سےگزارش ہےکہ آئین سازی کی جائے ، اس طرح کےمجرم کوسر عام سزائےموت دی جائے، سیکشن 22 اے میں لکھاہے حکومت چاہے تو سزا سرعام دے سکتی ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ کسی این جی او کی پرواہ نہیں کی جائے ، بچے بچیوں کو محفوظ کیا جائے۔ اس سے قبل زینب کے والد امین انصاری نے قاتل عمران کو سزا سنائے جانے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ قاتل کو سزا سنائے جانے پر100فیصد مطمئن ہوں، چاہتے تھے مجرم کو سرعام پھانسی ملے، ہمارا سرعام پھانسی کا مطالبہ جائز تھا۔ والد زینب کا کہنا تھا کہ خواہش ہے سزا پر عملدرآمد دنیا دیکھے، زینب کے واقعے نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا تھا، دنیا بھر سے لوگوں نے بھی سرعام پھانسی کا مطالبہ کیا تھا، چیف جسٹس سپریم کورٹ اورعدلیہ کا مشکور ہوں۔

FOLLOW US